We have detected Lahore as your city

پٹھوں کی کمزوری اور اس کا مکمل علاج

Dr. Fatima Ch

6 min read

Find & Book the best "General Physicians" near you

پٹھوں کی کمزوری کیا ہے؟

پٹھوں کی کمزوری ہر گھر کا ایک عام مصلہ ہے۔ آپ کو پٹھوں کی کمزوری ہو سکتی ہے جب آپ کی کوشش عام پٹھوں کے سنکچن یا حرکت پیدا نہیں کرتی ہے۔

پٹھوں کی کمزوری مختلف عوامل کی وجہ سے ہوسکتی ہے جیسے خراب جسمانی کنڈیشنگ، شدید ورزش، اور غذائیت میں کمی۔ اکثر، پٹھوں کی کمزوری ایسی حالت کی علامت ہوتی ہے جس کے لیے فوری طبی امداد کی ضرورت پڑسکتی ہے۔ لہذا، بنیادی وجہ تلاش کرنا اور علاج حاصل کرنا ضروری ہے۔

پٹھوں کی کمزوری کی علامات

:پٹھوں کی کمزوری کی علامات میں شامل ہیں

  • پٹھوں میں درد
  • تھکا ہوا محسوس کرنا
  • روز مرہ کے کاموں کو انجام دینے میں دشواری پیش آنا

پٹھوں کی کمزوری کا علاج – Pathon Ki Kamzori Ka Ilaj

یہاں چند قدرتی علاج ہیں جنہیں آپ پٹھوں کی کمزوری سے نمٹنے کے لیے طبی علاج کے ساتھ ملا کر آزما سکتے ہیں۔

۔1 انڈے

انڈے آپ کے جسم کو اس کے مناسب کام کے لیے ضروری توانائی اور غذائیت فراہم کرتے ہیں۔ یہ وٹامن اے، رائبوفلاوین، پروٹین، اور فولک ایسڈ جیسے غذائی اجزاء سے بھرپور ہوتے ہیں، یہ سب آپ کے جسم اور پٹھوں کے صحت مند کام کے لیے بہترین ہیں۔

آپ کو چاہئیے ہو گا؟

  • 1-2 انڈے

آپ کو کیا کارنا ہے؟

  • ناشتے میں ایک یا دو انڈوں کا استعمال کریں۔ انڈے کی زردی کا استعمال کرنے کی کوشش کریں۔ اس کے ساتھ ساتھ یہ پروٹین اور دیگر غذائی اجزاء سے بھرپور ہیں۔

آپ کو یہ کتنی بار کرنا چاہیے؟

  • روزانہ ایک بار، ترجیحاً ناشتے کے لیے۔

۔2 ایپل سائڈر وینیگر

اینٹی سوزش خصوصیات رکھنے کے علاوہ، ایپل سائڈر سرکہ پوٹاشیم، کیلشیم اور بی وٹامنز جیسے غذائی اجزاء سے بھرا ہوا ہے۔ مطالعے سے پتہ چلتا ہے کہ پوٹاشیم کی کمی پٹھوں کی کمزوری کا باعث بن سکتی ہے . اس طرح ایپل سائڈر سرکہ کا استعمال پٹھوں کو مضبوط بنانے میں مددگار ثابت ہو سکتا ہے جبکہ اس کی اینٹی سوزش کی خصوصیات درد اور سوزش کو کم کر سکتی ہیں۔

آپ کو چاہئیے ہو گا؟

  • 1 کھانے کا چمچ ایپل سائڈر وینیگر
  • 1 گلاس گرم پانی
  • شہد

آپ کو کیا کارنا ہے؟

  • ایک گلاس گرم پانی میں ایک کھانے کا چمچ ایپل سائڈر سرکہ ڈالیں۔
  • اچھی طرح مکس کریں اور اس محلول میں تھوڑا شہد ملا دیں۔
  • مرکب استعمال کریں۔

آپ کو یہ کتنی بار کرنا چاہیے؟

  • آپ یہ روزانہ 1 سے 2 بار کر سکتے ہیں۔

۔3 دودھ

دودھ کی مقدار نے پٹھوں کی پروٹین کی ترکیب کو بہتر بنانے کے لیے دکھایا ہے، اور یہ پٹھوں کی بہتر صحت میں حصہ ڈال سکتا ہے ۔

آپ کو چاہئیے ہو گا؟

  • 1 گلاس دودھ

آپ کو کیا کارنا ہے؟

  • ایک گلاس سادہ دودھ کا استعمال کریں۔

آپ کو یہ کتنی بار کرنا چاہیے؟

  • یہ روزانہ 2 بار کریں۔  لیکن اگر آپ کو ڈیری سے الرجی ہو تو دودھ سے پرہیز کریں۔

۔4 بادام

بادام میگنیشیم اور وٹامن ای کے بھرپور ذرائع ہیں اور آپ کے پٹھوں اور مجموعی صحت کے لیے فائدہ مند ہیں۔ یہ کاربوہائیڈریٹ اور پروٹین کو کھانے سے توانائی میں بھی تبدیل کرتے ہیں ۔ اس کے نتیجے میں، قدرتی طور پر پٹھوں کی کمزوری کا مقابلہ کرنے میں مدد مل سکتی ہے۔

آپ کو چاہئیے ہو گا؟

  • 8-10 بھیگے ہوئے بادام
  • 1 کپ دودھ

آپ کو کیا کارنا ہے؟

  • بادام کو رات بھر بھگو کر ان کی جلد کو نکال دیں۔
  • بھیگے ہوئے بادام کو ایک کپ دودھ کے ساتھ بلینڈ کریں۔
  • مرکب استعمال کریں۔

آپ کو یہ کتنی بار کرنا چاہیے؟

  • یہ روزانہ 1 سے 2 بار کریں۔

۔5 کلونجی کا تیل

کلونجی  کا تیل پٹھوں کی کمزوری سمیت صحت کے مختلف مسائل کے علاج میں اپنی تاثیر کے لیے بڑے پیمانے پر استعمال ہوتا رہا ہے۔ اس میں دو مرکبات ہیں – تھائموکوئنون اور تھائموہائیڈروکوئنون – جو اینٹی سوزش، اینالجیسک، اور شفا بخش خصوصیات  کو ظاہر کرتے ہیں۔ یہ خصوصیات کمزور اور دکھتے  پٹھوں کے علاج میں مدد کر سکتی ہیں۔

آپ کو چاہئیے ہو گا؟

  • کلونجی کا تیل (ضرورت کے مطابق)

آپ کو کیا کارنا ہے؟

  • کلونجی کے تیل سے متاثرہ پٹھوں پر مالش کریں۔
  • اسے 30 سے ​​60 منٹ تک لگا رہنے دیں اور پھر دھو لیں۔
  • متبادل طور پر، آپ کلونجی  کا ورجن تیل ایک چائے کا چمچ کھا سکتے ہیں۔

آپ کو یہ کتنی بار کرنا چاہیے؟

  • آپ روزانہ ایک بار ایسا کر سکتے ہیں۔

۔6 وٹامن اور معدنیات

  • آپ کی خوراک کے ذریعے کچھ وٹامنز اور معدنیات کی کافی مقدار پٹھوں کی کمزوری کے علاج میں مدد کر سکتی ہے۔
  • آئرن، کیلشیم، پوٹاشیم، اور میگنیشیم جیسے معدنیات آپ کے پٹھوں کی طاقت اور کام کو بہتر بنانے میں اہم کردار ادا کرتے ہیں۔
  • بی وٹامنز اور وٹامن ڈی میں کمی پٹھوں کی کمزوری کا سبب بن سکتی ہے ۔
  • لہذا، ایک صحت مند اور متوازن غذا پر عمل کریں جس میں پٹھوں کی کمزوری سے نمٹنے کے لیے تمام اہم وٹامنز اور معدنیات شامل ہوں۔
  • کچھ غذائیں جو ان غذائی اجزاء کے بھرپور ذرائع ہیں دودھ، انڈے، مچھلی، مرغی، پھلیاں، سارا اناج، ایوکاڈو اور پالک ہیں۔ اگر آپ ان غذائی اجزاء میں سے کسی کے لیے اضافی سپلیمنٹس لینا چاہتے ہیں تو اپنے ڈاکٹر سے مشورہ کریں۔

۔7 کیلے

کیلے آپ کے جسم کو فوری توانائی فراہم کرتے ہیں اور اسی لیے یہ پٹھوں کی کمزوری کا ایک بہترین علاج ہے۔ یہ پوٹاشیم اور کاربوہائیڈریٹ جیسے سوکروز اور گلوکوز سے بھرپور ہیں۔ جیسا کہ ہم جانتے ہیں، پوٹاشیم کی کمی پٹھوں میں خون کے بہاؤ کو محدود کر سکتی ہے اور پٹھوں میں درد کا سبب بن سکتی ہے۔ یہ میٹابولک بحالی کو بھی بہتر بناتے ہیں اور ورزش کے بعد کی سوزش کو کم کرتے ہیں ۔

آپ کو چاہئیے ہو گا؟

  • 1 کیلا

آپ کو کیا کارنا ہے؟

  • کیلے کو اپنی روزمرہ کی خوراک میں شامل کریں۔
  • آپ ایک کیلے کو دودھ میں ملا کر بھی کھا سکتے ہیں۔

آپ کو یہ کتنی بار کرنا چاہیے؟

  • آپ روزانہ 2 سے 3 بار ایک کیلا کھا سکتے ہیں۔

۔8 دہی

دہی میں ضروری غذائی اجزاء جیسے کیلشیم، پوٹاشیم، اور بی وٹامنز ہوتے ہیں جو آپ کے جسم اور پٹھوں کو توانائی فراہم کر سکتے ہیں ۔ اس میں قدرتی شکر بھی ہوتی ہے جو آپ کے کمزور پٹھوں کے لیے توانائی پیدا کرنے میں اضافی مدد فراہم کرتی ہے۔ تاہم، یہ اکیلے آپ کو مثبت نتائج نہیں لائے گا. مناسب خوراک کے ساتھ جسمانی تربیت جس میں کاربوہائیڈریٹس شامل ہوں آپ کو صحت مند عضلات کو برقرار رکھنے میں مدد ملے گی۔

آپ کو چاہئیے ہو گا؟

  • 1 پیالی سادہ دہی

آپ کو کیا کارنا ہے؟

  • ایک پیالے میں سادہ دہی کھائیں۔

آپ کو یہ کتنی بار کرنا چاہیے؟

  • آپ روزانہ کم از کم ایک بار ایسا کر سکتے ہیں۔

۔9 آلو

پوٹاشیم سے بھرپور آلو کا عرق آپ کے پٹھوں کی نقل و حرکت کو بڑھانے میں مدد کر سکتا ہے، اس طرح آپ کو پٹھوں کی کمزوری اور قدرتی طور پر اس کی علامات سے لڑنے میں مدد ملتی ہے ۔

آپ کو چاہئیے ہو گا؟

  • 1-2 آلو

آپ کو کیا کارنا ہے؟

  • ایک یا دو آلو رات بھر بھگو دیں۔
  • صبح چھلکے کو نکال کر بلینڈ کر لیں۔
  • آپ آلو کا رس آسانی سے نکالنے کے لیے اس میں تھوڑا سا پانی بھی ڈال سکتے ہیں۔
  • رس کو چھان لیں اور اس میں کچھ شہد ڈالیں
  • جوس پی لیں۔

آپ کو یہ کتنی بار کرنا چاہیے؟

  • آپ روزانہ ایک بار ایسا کر سکتے ہیں۔

اگرچہ یہ علاج آپ کے حق میں اور پٹھوں کی کمزوری کے خلاف کام کرتے ہیں، آپ ان کی تاثیر کو بڑھانے کے لیے طرز زندگی میں کچھ تبدیلیاں کر سکتے ہیں۔ ان پر ذیل میں تبادلہ خیال کیا گیا ہے

پٹھوں کی کمزوری دور کرنے کے لیے تجاویز

  • ہلکی ورزشیں باقاعدگی سے کریں۔
  • روزانہ چہل قدمی کریں۔
  • اچھی طرح سونا.
  • اپنے تناؤ کی سطح کو کنٹرول میں رکھیں۔ اگر ضروری ہو تو مشاورت حاصل کریں۔
  • مراقبہ اور یوگا کی مشق کریں۔
  • آپ کے پٹھوں کو تیزی سے صحت یاب ہونے میں مدد کرنے کے لیے ہر وقت ایک بار جسمانی مساج کروائیں۔
  • متوازن اور غذائیت سے بھرپور غذا پر عمل کریں۔
  • کمزور پٹھوں کی بحالی کو تیز کرنے کے لیے صحت مند اور متوازن غذا کا استعمال بہت ضروری ہے۔ یہاں کھانے کی ایک فہرست ہے جو پٹھوں کی کمزوری کو بہتر بنا سکتی ہے۔

پٹھوں کی کمزوری کے لیے بہترین غذا

اپنی روزمرہ کی خوراک میں درج ذیل غذاؤں کو شامل کریں:

۔1 گری دار میوے

گری دار میوے میں ان سیچوریٹڈ چکنائی اور میگنیشیم جیسے غذائی اجزاء ہوتے ہیں۔ یہ چربی اور غذائی اجزاء آپ کے پٹھوں کو اس کے معمول کے کام کے لیے درکار توانائی فراہم کرتے ہیں ۔ اخروٹ ، بادام، کاجو اور اخروٹ میگنیشیم سے بھرپور ہوتے ہیں۔

۔2 پھل اور سبزیاں

اپنی روزمرہ کی خوراک میں تازہ پھلوں اور سبزیوں کو شامل کرنا آپ کے پٹھوں کو مضبوط بنانے میں مدد کرتا ہے اور آپ کو انفیکشن اور بیماریوں سے بچاتا ہے جو آپ کے پٹھوں کے کام میں رکاوٹ بن سکتے ہیں۔

۔3 سارا اناج

ہول گرین کامپلیکس کاربوہائیڈریٹ پر مشتمل ہوتا ہے اور اس طرح سادہ کاربوہائیڈریٹس سے ہضم کرنا آسان ہوتا ہے۔ یہ کاربوہائیڈریٹ آپ کے جسم کو گلوکوز فراہم کرتے ہیں، جو آپ کے پٹھوں اور جسم کے لیے توانائی کا بنیادی ذریعہ ہے۔

احتیاط: اگر آپ کو گلوٹین سے الرجی ہے تو ہول گرین  نہ کھائیں۔

۔4 ٹھنڈے پانی کی مچھلی

ٹھنڈے پانی کی مچھلی پروٹین، میگنیشیم اور اومیگا 3 فیٹی ایسڈز کے بھرپور ذرائع ہیں۔ یہ غذائی اجزاء آپ کے پٹھوں کی مناسب نشوونما، اور مرمت کے لیے ضروری ہیں۔ کولڈ سالمن، ٹونا، سارڈینز، اور میکریل خاص طور پر اومیگا 3 فیٹی ایسڈز میں زیادہ ہوتے ہیں۔

پٹھے ہمارے جسم کا ایک لازمی حصہ ہیں اور روزمرہ کی بنیادی سرگرمیوں کو انجام دینے کے لیے ان کی ضرورت ہوتی ہے۔ لہذا، اگر آپ کو پٹھوں کی کمزوری ہے تو جلد از جلد علاج کروانا دانشمندی ہے۔

اگرچہ یہ علاج ہلکی پٹھوں کی کمزوری کی علامات کو کم کرنے میں مدد کر سکتے ہیں، لیکن یہ مکمل طور پر دائمی پٹھوں کی کمزوری کے لیے کام نہیں کر سکتے۔ اس لیے، مناسب علاج کے لیے اپنے ڈاکٹر سے مشورہ کریں، جس میں جسمانی تھراپی، ادویات وغیرہ شامل ہو سکتے ہیں۔

Disclaimer: The contents of this article are intended to raise awareness about common health issues and should not be viewed as sound medical advice for your specific condition. You should always consult with a licensed medical practitioner prior to following any suggestions outlined in this article or adopting any treatment protocol based on the contents of this article.

Dr. Fatima Ch - Author Dr. Fatima Ch is a highly qualified Physiotherapist with a number of certifications including MS (Orthopedic Manual Therapist) and DPT (Physical therapist) as well as 4 years of experience in her field.
Top Doctors in Pakistan


Book Appointment with the best "General Physicians"